نبی کریم ﷺ پر درود پڑھنے کے فضائل اور نہ پڑھنے کی وعید

علامہ ابن قیم ؒ نے درود شریف پڑھنے کے ۳۹ فوائد ذکر کئے ہیں ، ان میں سے چند اہم فوائد یہ ہیں :
❶درود شریف پڑھنے سے اللہ تعالیٰ کے حکم پر عمل ہوتا ہے۔
❷ایک مرتبہ درود شریف پڑھنے سے اللہ تعالیٰ کی دس رحمتیں نازل ہوتی ہیں ۔
❸دس نیکیاں لکھی جاتی ہیں ۔
❹ دس گناہ معاف کردیے جاتے ہیں ۔
❺دس درجات بلند کردیے جاتے ہیں
❻دعاسے پہلے درود شریف پڑھنے سے دعا کی قبولیت کا امکان زیادہ ہوتا ہے۔
❼ اذان کے بعد کی مسنون دعا سے پہلے درود شریف پڑھا جائے تو قیامت کے روز رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی شفاعت نصیب ہوگی۔
❽درود شریف پڑھنے سے مجلس بابرکت ہو جاتی ہے۔
❾جب انسان نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم پر درود شریف بھیجتا ہے تواللہ تعالیٰ فرشتوں کے سامنے اس کی تعریف کرتا ہے۔
❿درود شریف پڑھنے والے شخص کی عمر اس کے عمل اور رزق میں برکت آتی ہے۔
⓫درود شریف کے ذریعے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے اپنی محبت کا اظہار ہوتا ہے۔ 
⓬درود شریف پڑھنے سے دل کو ترو تازگی اور زندگی ملتی ہے۔
⓭درود شریف کــثرت سے پڑھا جائے تو پریشانیوں سے نجـــات ملتی ہے

نبی کــریم ﷺ پر درود پڑھنے کے فضائل

ابی بن کعب ؓ بیان کرتے ہیں کہ انہوں نے کہا
’’اے اللہ کے رسـول ﷺ!

میـں آپ ﷺ پر زیادہ درود پڑھـتا ہوں ، تو آپ ﷺ کا کیا خیال ہے کہ میں آپ ﷺ پر کتنا درود پڑھـوں ؟ آپ ﷺ نے فـرمایا

مَــا شِئْتَ جتنا چاہو۔ میں نے کہا : چـوتھا حصہ؟

آپ ﷺ نے فـرمایا: 
مَا شِئْتَ ، فَـإِنْ زِدْتَّ فَہُوَ خَیْرٌ لَّکَ
جتنا چــاہواور اگر اس سـے زیادہ پڑھــو گے تو وہ تمــہارے لئے بہتر ہے۔

میں نے کہا : آدھــا حصـہ ؟ آپ ﷺ نے فـرمایا:
مَا شِئْتَ ، فَإِنْ زِدْتَّ فَہُوَ خَیْرٌ لَّکَ
جتنا چـــــاہو اور اگـر اس سے زیادہ پڑھـو گے تو وہ تمہـــارے لئے بہتـر ہے۔ میـں نے کہا : دو تہــــائی ؟

رسول اللہ ﷺ نے فـرمایا: 
مَا شِئْتَ فَإِنْ زِدْتَّ فَہُوَ خَیْرٌ لَّکَ
جتنا چاہـو اور اگر اس سـے زیادہ پڑھــو گے تو وہ تمہــارے لئـے بہتـر ہے۔

میں نے کہا : میں آپ ﷺ پر درود ہی پڑھـتا رہوں تو ؟

نبی کریم ﷺ نے فرمایا:

إِذًا تُکْفٰی ہَمَّکَ، وَیُغْفَرُ لَکَ ذَنْبُکَ تب تمھیں
تمھاری پریشانی سے بچــا لیا جائے گا اور تمھارے گناہ مـــعاف کر دئیے جائیں گـے۔

ایک روایت ہے میں ہـے:
إِذَنْ یَکْفِیْکَ اﷲُ ہَمَّ الدُّنْیَا وَالآخِرَۃِ
تب تمھیں اللہ(تعالیٰ) دنیا وآخـــــــرت کی پریشانیوں سے بچـا لے گا۔

ترمـذی:۲۴۵۷،وصحیحہ الالبانی

⓮روزِ قیامت نبی ﷺ کے سب سے زیادہ قـریب وہی ہو گا جو سب سـے زیادہ نبی کریم ﷺ پر درود شریف بھیجتا تھا۔
▪ ابن مسعودؓ سے روایت ہے کہ
رســـول اکرم ﷺ نے فـرمایا:

⊙ أَوْلَی النَّـاسِ بِیْ یَـوْمَ الْـقِیَامَـۃِ أَکْثَـرُہُمْ عَلَیَّ صَــــلاَۃً

قیامت کے دن لوگــوں میـں سے سب سے زیادہ میـرے قـــریب وہ ہو گا جو سب سے زیادہ مجـھ پر درود بھیــجے گا۔

رواہ الترمذی وابن حبان وابو یعلی وغیرہ

درود نہ پڑھنے پر وعیـد

جـب نبی کـــریم ﷺ کا ذکر کیا جـــــائے تو ذکـرکرنے اور سننے والے دونوں کو آپﷺ پر درود بھیجنا چاہیے۔

نبی کـریـم ﷺ کا ارشاد ہے

⊙ رَغِـــمَ أَنْفُ رَجُلٍ ذُکِرْتُ عِنْدَ فَلَمْ یُصَلِّ عَلَیَّ

’’اس آدمی کی ناک خـــاک میـں ملے جس کے پاس میـــرا ذکر کـیا گیا اور اس نے مـــجھ پر درود نہ بھیـجا۔‘
ترمـذی:۳۵۴۵۔وصحیحہ الالبانی

نیز رسول اللہﷺ ارشاد فـرمایا

⊙ اَلْبَــخِیْلُ الَّذِیْ مَنْ ذُکِرْتُ عِنْدَہُ فَلَمْ یُصَلِّ عَلَیَّ

بـــخیل وہ ہے جس کے پاس میـرا ذکر کیا جــائے اور وہ مـجھ پـر درود نہ بھیــجے۔

ترمـذی:۳۵۴۶۔وصحیحہ البانی

ابـن عباسؓ عنہ سے روایت ہے کہ
نبـی ﷺ نے ارشاد فرمـایا

⊙ مَـــنْ نَسِیَ الصَّـــلاَۃَ عَلَیَّ خَطِیَٔ طَـرِیْقَ الْجَنَّۃِ

جــــــو شخص مجـھ پر درود بھیجنا بھــول جائے وہ جنت کے راستے سـے ہٹ گـیا۔

صحیح الجامع للألبانی : ۶۵۶۸

Leave a Comment

Translate »