حضرت محمد ﷺ رحمت اللعالمین ہیں

اللہ تعالیٰ قرآن پاک میں ارشاد فرماتے ہیں

وَمَا ارسَلنٰکَ اِلَّا رَحمَۃً الّلعلٰمِین۔

.اے پیارے نبی ﷺ ہم نے آپﷺ کو تمام جہانوں کے لئے رحمت بنا کر بھیجا ہے

Hazrat Muhammad PBUH

اور یہ رحمت اللعالمین ﷺ کی رحمت دنیا اور آخرت کے لئے ہمیشہ ہمیشہ ہے کیونکہ اللہ تعالیٰ نے حضرت محمدﷺ کو تمام جہانوں کے لئے رحمت بنا کر بھیجا ہے۔ دنیا میں آپ ﷺ تمام مخلوقات کے لئے باعثِ رحمت ہیں۔ دنیا میں کافروں کو بھی حضور ﷺ کی وجہ سے نفع ملتا رہے گا۔ ان کی  صورتیں مسخ نہیں ہوں گی، سابقہ امتوں میں سے اگر کوئی گناہ کرتا تھا تو ان کی صورتیں مسخ کر دی جاتی تھیں۔ مگر رحمت دوعالمﷺ کی وجہ سے قربِ قیامت تک صورتیں مسخ نہ ہوں گی اور اس کے علاوہ بے شمار فوائد کفّار کو بھی نصیب ہوئے۔ حضورﷺ دن رات کافروں کے لئے ہدایت کی دعا مانگا کرتے تھے۔ اور ہر وقت اُن کو دین کی طرف بلاتے حالانکہ طائف والوں نے رحمت اللعالمین کو پتھر مار مار کے لہولہان کر دیا تھا۔ حضرت جبرائیلؑ حاضر ہوئے اور عرض کی، یارسول اللہ ﷺ آپ حکم فرمائیں تو ان تمام کفّار کو ابھی دونوں طرف کے پہاروں کو ملا کر ختم کر دیا جائے گا یا جو سزا آپ تجویز فرمائیں اُن کو دی جائے۔ آپ ﷺ کی رحیم و کریم ذات نے جواب دیا کہ  میں اللہ سے اُمید رکھتا ہوں کہ اگر یہ مسلمان نہیں ہوئے تو ان کی اولاد میں سے ایسے لوگ پیدا ہوں گے جو اللہ تعالیٰ کی عبادت کریں گے ۔ ھضرت محمدﷺ نے ان کے لئے بد دُعاکرنے کی بجائے دعا فرمائی۔

ترجمہ: اے میرے پیارے اللہ! میری قوم کو ہدایت عطا فرمائیے یہ مجھے جانتے نہیں ہیں۔

Translate »